عُثمان بزدار حقیقی خادم اعلیٰ بن گئے۔!! جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کا وعدہ پورا، صوبہ محاذ کے لیے کتنا بجٹ مختص کردیا؟ شاندار خبر

ملتان (ویب ڈیسک) سردار عثمان بزدار نے عوام سے کیا اور ایک اور وعدہ پورا کر دیا۔ پنجاب حکوت کے جنوبی پنجاب کے لیے تاریخی فیصلے کر دیے۔ جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے لیے انڈشنل چیف سیکریٹری اور اینڈیشنل آئی جی پولیس کا نوٹی فیکیشن جاری کردیا۔ جنوبی پنجاب کے لئے 33فیصد بجٹ مختص کردیا گیا۔

جنوبی پنجاب کا بجٹ رنگ فینسنگ کی وجہ سے کہیں اور ٹرانسفر نہیں کیا جا سکے گا۔ وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا ہے کہ جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے قیام کا وعدہ پورا کردیاجبکہ لاہور میں آکسیجن گیس پلانٹ لگانے کی منظوری دیدی۔تفصیل کے مطابق وزیر اعلیٰ نے کہا کہ حکومت نے جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے قیام سے متعلق جنوبی پنجاب کے عوام سے کیا گیاسب سے بڑا وعدہ پوراکردیا۔جنوبی پنجاب کے لئے ایڈیشنل چیف سیکرٹری اور ایڈیشنل آئی جی کا تقرر کردیا گیا اور ایڈیشنل چیف سیکرٹری ساؤتھ اور ایڈیشنل آئی جی ساؤتھ کے عہدوں پر افسران کی تعینات کے احکامات جاری ہو چکے ہیں

اور یہ افسر آج سے اپنی ذمہ داریاں سنبھال لیں گے ۔ صوبے کے پسماندہ اضلاع کی ترقی و خوشحالی کیلئے خصوصی طور پر بجٹ میں فنڈز مختص کئے ہیں۔ جنوبی پنجاب کے لئے 33 فیصد فنڈز رکھے گئے ہیں اور ان رنگ فینسنگ کی گئی ہے تا کہ انہیں کسی اور مقصد کے لئے استعمال نہ کیا جا سکے ۔ ساؤتھ پنجاب سیکرٹریٹ کے لئے بجٹ میں ڈیڑھ ارب روپے مختص کئے گئے ہیں ۔

ایوان سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آج نئے مالی سال کا بجٹ منظور ہوا ہے جو کہ ایک تاریخی موقع ہے جس پر میں سپیکر کو خراج تحسین پیش کر تا ہوں جنہوں نے احسن طریقے سے ایوان کی کارروائی چلائی۔ پنجاب میں ٹڈی دل کے حملے سے 24اضلاع متاثر ہو ئے لیکن بروقت عملی اقدامات کے آغاز سے نقصانات کو بہت حد تک محدود کیا گیا،8لاکھ ایکڑ رقبے پر سپرے کر کے ٹڈی دل کا خاتمہ کیاگیا۔

پنجاب میں احساس پروگرام کے تحت 165 ارب روپے کی خطیر رقم متاثرہ بہن بھائیوں کو 12 ہزار روپے فی کس کے حساب سے تقسیم کی گئی ۔ انہوں نے کہا کہ کورونا سے پہلے مارچ 2020تک کے مالی حالات سے بھی ایوان کو آگاہ کرنا چاہتا ہوں جب ایف بی آرکے ہدف میں13فے صد اضافہ متوقع تھا۔صوبے کے اپنے وسائل میں 23 فیصد اضافہ دے کھنے کو آرہا تھا اوروفاق سے محصولات کی مد میں 20فیصد اضافے کے ساتھ 852.2ارب روپے کی خطیر رقم متوقع تھی لیکن کورونا ایک آزمائش بن کرسامنے آیا اور پنجاب کو 635 ارب روپے کم ریونیو

ملا ۔ صوبہ بھر میں تجاوزات کے خلاف آپریشن میں 135 ارب روپے مالیت کی سرکاری اراضی واگزار کرائی گئی۔ تفتان میں کمیونٹی سنٹر قائم کیا جائے گا جبکہ تربت میں 100 بستر وں پر مشتمل ہسپتال بنایا جائے گااور اس مقصد کے لئے ایک ارب 25 کروڑ روپے رکھے گئے ۔15 سال بعد ہماری حکومت نے ریسکیو ملازمین کے لئے سروس سٹرکچر اور الاؤنسز کی منظوری دی ۔میں عوام کی خدمت کے لئے آیا ہوں اورخود کو بھی عوام کے سامنے جوابدہ سمجھتا ہوں۔بعدازاں وزیراعلیٰ سے مختلف اضلاع سے تعلق رکھنے والے اراکین

صوبائی اسمبلی نے ملاقات کی ۔اراکین اسمبلی نے فرداً فرداً وزیراعلیٰ کو اپنے حلقوں کے مسائل اور فلاح عامہ کے کاموں سے آگاہ کیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے اراکین اسمبلی کو مسائل جلد حل کرنے کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ عام آدمی کو ریلیف دینے کیلئے ہرممکن اقدام اٹھائیں گے ۔ ملاقات کرنے والوں میں صوبائی وزیر مہر اسلم بھروانہ، اراکین پنجاب اسمبلی نذیر احمد خان،سردار اویس خان دریشک، وارث عزیز،خیال احمد،رانا شہبازاحمد، سیمابیہ طاہر، شاوانہ بشیر، مسرت جمشید،فرحت فاروق،آسیہ امجد، طلعت فاطمہ نقوی، شاہینہ کریم،زینب عمیر اورمومنہ وحید شامل تھیں۔دوسری طرف وزیراعلیٰ نے صوبائی کابینہ کا اجلاس آج طلب کر لیا۔بعدازاں وزیراعلی نے وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی والدہ کے انتقال پر گہرے

دکھ اور افسوس کا اظہارکرتے ہوئے لواحقین سے اظہارتعزیت کیا۔دوسری طرف ہسپتالوں میں آکسیجن گیس کے سلنڈرز کی فراہمی کیلئے وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے بڑے اقدام کی منظوری دیدی ، ذرائع کے مطابق پنجاب میں آکسیجن گیس کے لئے حکومت کا خود پلانٹ لگانے کا فیصلہ سامنے آگیا ،وزیراعلی نے لاہور میں پائلٹ پراجیکٹ کی منظوری دیدی۔ پائلٹ پراجیکٹ کے لئے لاہور ،فیصل آباد ،ملتان اور راولپنڈی کے نام تجویز کئے گئے تاہم وزیراعلیٰ نے لاہورمیں پائلٹ پراجیکٹ کی منظوری دیدی ،وزیراعلیٰ نے سیکرٹری پرائمری ہیلتھ کو دو ہفتے کے اندر پائلٹ پراجیکٹ کا پلان پیش کرنے کی ہدایت کی ۔

Reference:Hassan Nisar

About Alex Bruno

Check Also

SpaceX Finally Installs “Robot Chopsticks” designed to catch Starship rockets

A few weeks ago, SpaceX began the process of placing the integrated structure atop Starbase’s …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *